دل ناداں تجھے ہوا کیا ہے

مرزا غالب

دل ناداں تجھے ہوا کیا ہے

مرزا غالب

MORE BYمرزا غالب

    دلچسپ معلومات

    فلم : مرزا غالب ۱۹۵۴

    دل ناداں تجھے ہوا کیا ہے

    آخر اس درد کی دوا کیا ہے

    ہم ہیں مشتاق اور وہ بیزار

    یا الٰہی یہ ماجرا کیا ہے

    میں بھی منہ میں زبان رکھتا ہوں

    کاش پوچھو کہ مدعا کیا ہے

    جب کہ تجھ بن نہیں کوئی موجود

    پھر یہ ہنگامہ اے خدا کیا ہے

    یہ پری چہرہ لوگ کیسے ہیں

    غمزہ و عشوہ و ادا کیا ہے

    شکن زلف عنبریں کیوں ہے

    نگہ چشم سرمہ سا کیا ہے

    سبزہ و گل کہاں سے آئے ہیں

    ابر کیا چیز ہے ہوا کیا ہے

    ہم کو ان سے وفا کی ہے امید

    جو نہیں جانتے وفا کیا ہے

    ہاں بھلا کر ترا بھلا ہوگا

    اور درویش کی صدا کیا ہے

    جان تم پر نثار کرتا ہوں

    میں نہیں جانتا دعا کیا ہے

    میں نے مانا کہ کچھ نہیں غالبؔ

    مفت ہاتھ آئے تو برا کیا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ٹینا ثانی

    ٹینا ثانی

    پیناز مسانی

    پیناز مسانی

    طلعت محمود

    طلعت محمود

    بھارتی وشواناتھن

    بھارتی وشواناتھن

    گایتری اشوکن

    گایتری اشوکن

    طلعت محمود

    طلعت محمود

    سمراٹ چھابرا

    سمراٹ چھابرا

    عابدہ پروین

    عابدہ پروین

    کویتا سیٹھ

    کویتا سیٹھ

    فریحہ پرویز

    فریحہ پرویز

    شمونا رائے بسواس

    شمونا رائے بسواس

    نامعلوم

    نامعلوم

    طلعت محمود

    طلعت محمود

    RECITATIONS

    شمس الرحمن فاروقی

    شمس الرحمن فاروقی,

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    شمس الرحمن فاروقی

    دل ناداں تجھے ہوا کیا ہے شمس الرحمن فاروقی

    نعمان شوق

    دل ناداں تجھے ہوا کیا ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY