Mohammad Deen Taseer's Photo'

محمد دین تاثیر

1902 - 1958 | لاہور, پاکستان

ترقی پسند تحریک کے سرخیل،رسالہ "کارواں" کے مدیر،انگلینڈ سے انگریزی میں ڈاکٹریٹ کرنے والے برصغیر کے پہلے ادیب

ترقی پسند تحریک کے سرخیل،رسالہ "کارواں" کے مدیر،انگلینڈ سے انگریزی میں ڈاکٹریٹ کرنے والے برصغیر کے پہلے ادیب

داور حشر مرا نامۂ اعمال نہ دیکھ

اس میں کچھ پردہ نشینوں کے بھی نام آتے ہیں

ہمیں بھی دیکھ کہ ہم آرزو کے صحرا میں

کھلے ہوئے ہیں کسی زخم آرزو کی طرح

جس طرح ہم نے راتیں کاٹی ہیں

اس طرح ہم نے دن گزارے ہیں

یہ ڈر ہے قافلے والو کہیں نہ گم کر دے

مرا ہی اپنا اٹھایا ہوا غبار مجھے

ربط ہے حسن و عشق میں باہم

ایک دریا کے دو کنارے ہیں

حضور یار بھی آنسو نکل ہی آتے ہیں

کچھ اختلاف کے پہلو نکل ہی آتے ہیں

یہ دلیل خوش دلی ہے مرے واسطے نہیں ہے

وہ دہن کہ ہے شگفتہ وہ جبیں کہ ہے کشادہ