ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد

7498 کتاب

کتب خانہ: تعارف

ادارۂ ادبیات اردو کا قیام 1920ء میں ہوا تھا۔ یہ ادارہ حیدرآباد کے علاوہ سابقہ ریاست حیدرآباد کے دیگر اضلاع میں اردو زبان و ادب کے فروغ کا کام کرتا تھا اور اس کی ریاست کے اضلاع میں بھی شاخیں تھی۔ یہ ایک طرح کی ادبی تحریک تھی جس کے روح رواں اور بانی مشہور محقق ڈاکٹر محی الدین قادری زور تھے، اردو زبان و ادب کی توسیع اور حفاظت، اردو کو مختلف علوم و فنون سے روشناس کرانا، سرزمین دکن میں اردو زبان و ادب کا صحیح ذوق پیدا کرنا، تاریخ دکن کی خدمت اور ملک کے تاریخی اور ادبی آثار کی حفاظت اور تصنیف و تالیف میں رہبری اور مدد جیسے عوامل اس ادارہ کے مقاصد میں شامل تھے، جو اب تک بحسن خوبی انجام پائے۔ ادارہ ادبیات اردو آج کے دور میں بھی اپنی مطبوعات اور رسائل کے لیے شہرت رکھتا ہے۔ رسالہ "سب رس" اسی دارے کی دین ہے۔ اس کے علاوہ ادارہ ادبیات اردو کے امتحانات اردو ماہر، اردو عالم، اردو فاضل حیدرآباد و سکندرآباد، اضلاع و بیرون ریاست تلنگانہ کے تمام مراکز پر ایک ساتھ منعقد کرتے آ رہا ہے۔ یہ امتحانات دونوں ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے مختلف تعلیمی اداروں میں کئی مساوی قابلیتوں کے برابر تصور کیے جاتے ہیں۔ اس دارے کی خدمات کو فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد کی اب بیشتر اردو کتابیں ریختہ ڈیجیٹل لائبریری کا حصہ ہیں، جن میں "آب حیات" از محمد حسین آزاد، "ابن بطوطہ کا سفر نامہ ہندوستان" از اقبال احمد، "ابن رشد" از محمد یونس انصاری، "ابتدائی اردو" کی تمام جلدیں از عبد الرحمن بارکر، "آئین قیصری" از محمد ذکاء اللہ، "ابوالکلام کے افسانے"، "آتش گل" از جگر مرادآبادی، "آثار الصنادید" از سرسید، "احسن التواریخ" از منشی رام سہائے تمنا، "اقبال کامل" از عبد السلام ندوی، "آخری تحفہ" از پریم چند، "اردو دب کی تاریخ" از نسیم قریشی، "اردو کی پہلی کتاب" تمام حصے از محمد حسین آزاد، "اردوئے معلی" از مرزا غالب، "اسباب بغاوت ہند" از سر سید، "افادات سلیم" از وحید الدین سلیم، جیسے اردو ادب کے شاہکار جبکہ رسائل میں "ادب لطیف، "ادبی دنیا، "اردو سائیکو لوجی، "ارم، "افادہ، حیدرآباد، "افکار، بھوپال، "البیان، امرتسر، وغیرہ جیسے  بیشتر شمارے یہاں  موجود ہیں، ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد کے ذخیرے سے آپ گھر بیٹھے استفادہ کرسکتے ہیں۔

مزید پڑھئے
ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد
باعتبار : عنوان
  • عنوان
  • سال
  • مصنف

تاریخ ہندوستان

مولوی کریم الدین

1878

تاریخ ہندوستان کی تمہید

محمد مجیب

1939

تاریخ حسن کاری

میر امجد علی

1944

تاریخ اسلام

شاہ معین الدین احمد ندوی

1949

تاریخ اسلام

شاہ معین الدین احمد ندوی

1958

تاریخ اسلام

شاہ معین الدین احمد ندوی

1952

تاریخ اسلام

شاہ معین الدین احمد ندوی

1953

تاریخ اسلام

نامعلوم مصنف

  

تاریخ جلسۂ قیصری

  

1876

تاریخ جمالیات

احمد صدیق مجنوں

  

تاریخ جمالیات

سعید احمد رفیق

1972

تاریخ جمہوریۂ روما

ڈبلیو۔ ای۔ ہیٹ لینڈ

1926

تاریخ جمہوریۂ روما

ڈبلیو۔ ای۔ ہیٹ لینڈ

1926

تاریخ جمہوریۂ روما

ڈبلیو۔ ای۔ ہیٹ لینڈ

1926

تاریخ معاشیات

  

1932

تاریخ ملک

  

1964

تاریخ مولد النبی

علی شبیر

1932

تاریخ قطب شاہی حیدرآباد

  

  

تاریخ راجگان ہند

محمد نجم الغنی خان

1927

تاریخ سادات امروہہ

جمال احمد نقوی

1934

تاریخ سعید

محمد عبد القادر

  

تاریخ شیر شاہی

عباس خاں سروانی

1963

تاریخ شمسیہ

  

1922

تاریخ شجاعت

عازم رضوی

1963

تاریخ سندھ

  

  

تاریخ سیاسیات

عبدالمجید صدیقی

1950

تاریخ سیاسیات

سر فریڈرک پولک

1925

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1933

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1935

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1940

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1926

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1928

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1936

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1928

تاریخ طبری

ابو جعفر محمد بن جریر الطبری

1941

تاریخ تعلیم

  

  

تاریخ ٹونک

  

1983

تاریخ تراب

شیخ محمد تراب علی

1893

تاریخ یونان قدیم

اڈولف ہولم

1931

تاریخ اندلس

نامعلوم مصنف

  

تاریخ عروج الاسلام

علامہ ابن الاثیر الجرزی

1901

تاریخ عروج الاسلام

علامہ ابن الاثیر الجرزی

1901

تاریخ عروج الاسلام

علامہ ابن الاثیر الجرزی

1904

تاریخ عروج الاسلام

علامہ ابن الاثیر الجرزی

1901

تاریخ یونان

  

1919

تاریخ یونان

اڈولف ہولم

1924

تاریخ زوال روما

  

1926

تاریخی رومان

  

1943

تاریخ ومشاہیر جالنہ

نامعلوم مصنف

  

تاریخ و تنقید

حامد حسن قادری

1939

Go to: