ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد

7498 کتاب

کتب خانہ: تعارف

ادارۂ ادبیات اردو کا قیام 1920ء میں ہوا تھا۔ یہ ادارہ حیدرآباد کے علاوہ سابقہ ریاست حیدرآباد کے دیگر اضلاع میں اردو زبان و ادب کے فروغ کا کام کرتا تھا اور اس کی ریاست کے اضلاع میں بھی شاخیں تھی۔ یہ ایک طرح کی ادبی تحریک تھی جس کے روح رواں اور بانی مشہور محقق ڈاکٹر محی الدین قادری زور تھے، اردو زبان و ادب کی توسیع اور حفاظت، اردو کو مختلف علوم و فنون سے روشناس کرانا، سرزمین دکن میں اردو زبان و ادب کا صحیح ذوق پیدا کرنا، تاریخ دکن کی خدمت اور ملک کے تاریخی اور ادبی آثار کی حفاظت اور تصنیف و تالیف میں رہبری اور مدد جیسے عوامل اس ادارہ کے مقاصد میں شامل تھے، جو اب تک بحسن خوبی انجام پائے۔ ادارہ ادبیات اردو آج کے دور میں بھی اپنی مطبوعات اور رسائل کے لیے شہرت رکھتا ہے۔ رسالہ "سب رس" اسی دارے کی دین ہے۔ اس کے علاوہ ادارہ ادبیات اردو کے امتحانات اردو ماہر، اردو عالم، اردو فاضل حیدرآباد و سکندرآباد، اضلاع و بیرون ریاست تلنگانہ کے تمام مراکز پر ایک ساتھ منعقد کرتے آ رہا ہے۔ یہ امتحانات دونوں ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے مختلف تعلیمی اداروں میں کئی مساوی قابلیتوں کے برابر تصور کیے جاتے ہیں۔ اس دارے کی خدمات کو فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد کی اب بیشتر اردو کتابیں ریختہ ڈیجیٹل لائبریری کا حصہ ہیں، جن میں "آب حیات" از محمد حسین آزاد، "ابن بطوطہ کا سفر نامہ ہندوستان" از اقبال احمد، "ابن رشد" از محمد یونس انصاری، "ابتدائی اردو" کی تمام جلدیں از عبد الرحمن بارکر، "آئین قیصری" از محمد ذکاء اللہ، "ابوالکلام کے افسانے"، "آتش گل" از جگر مرادآبادی، "آثار الصنادید" از سرسید، "احسن التواریخ" از منشی رام سہائے تمنا، "اقبال کامل" از عبد السلام ندوی، "آخری تحفہ" از پریم چند، "اردو دب کی تاریخ" از نسیم قریشی، "اردو کی پہلی کتاب" تمام حصے از محمد حسین آزاد، "اردوئے معلی" از مرزا غالب، "اسباب بغاوت ہند" از سر سید، "افادات سلیم" از وحید الدین سلیم، جیسے اردو ادب کے شاہکار جبکہ رسائل میں "ادب لطیف، "ادبی دنیا، "اردو سائیکو لوجی، "ارم، "افادہ، حیدرآباد، "افکار، بھوپال، "البیان، امرتسر، وغیرہ جیسے  بیشتر شمارے یہاں  موجود ہیں، ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد کے ذخیرے سے آپ گھر بیٹھے استفادہ کرسکتے ہیں۔

مزید پڑھئے
ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد
باعتبار : عنوان
  • عنوان
  • سال
  • مصنف

علم السیاست

اسٹفن لیکاک

1924

الزام کس پر

محمد حسین حسان

  

عماد الدین زنگی

صادق حسین سردھنوی

1947

امام ابو حنیفہ

عینی

  

امامی بھی پڑھنے لگے

  

1940

ایمان سخن

شیر محمد خاں ایمان

1937

امداد

  

  

امداد الادب

سید امداد علی

1871

امکان، مہاراشٹر

  

  

امتحان اہل کاران صیغۂ عدالت

  

  

امتحان پاس کرنا

منشی غلام نبی

  

انعامی مقابلہ

محمد حسین حسان

1947

انڈین کاجو

عاتق شاہ

1979

انڈین نیشنل کانگریس اور اہل اسلام

عبد القیوم

  

اندر سبھا امانت

امانت لکھنوی

1950

انگلستان اور عربی علوم وفنون

  

  

انگلستان میں

محمد عبدالقادر حبیب

  

انکشافات

محمد علی اثر

2009

انکشاف

س یونس

1997

انکشافات گجویل

میر محمد امیر علی

  

انقلاب ایران اور اس کی اسلامیت

عتیق الرحمٰن سنبھلی

  

انقلاب کابل

آغا رفیق بلند شہری

  

انقلاب اٹھارہ سو ستاون کی تصویر کا دوسرا رخ

  

  

انقلاب فرانس

باری

  

انقلاب فرانس

  

1939

انقلاب روس

  

1936

انقلابی حکومت کی یک سالہ کارگذاری

نامعلوم مصنف

  

انقلاب الامم

عبد السلام ندوی

1945

انقلاب کی جھلکیاں

  

1987

انسان اور دیوتا

نسیم حجازی

  

انسان سائنس اور ماحالو

محمد یوسف مڑکی

1992

انسان کامل

  

1908

انسانی حقوق کے لئے تشویش حقیقی اور غیر حقیقی

نامعلوم مصنف

1986

انسانی مسائل کا حل

شاہ محمد عبدالعلیم قادری

  

انسانیت

سی۔ ای۔ مدیراج

1957

انسانیت

سی۔ ای۔ مدیراج

  

انشاء

مرزا فرحت اللہ بیگ

1943

انشا کی تعلیم

وقار عظیم

1943

انشائے بہار بیخزان

منشی غلام امام شہید

1886

انشائے بشیر

  

1924

انشائے داغ

  

1941

انشاء ہادی النساء

سید احمد دہلوی

1910

انشائے خرد افروز

  

  

لن ترانی

علیم جہانگیر

1985

انشائے لطیف

لطیف الدین احمد

1935

انشائے لطیف

لطیف الدین احمد

1925

انشائے نظم

مرزا داؤد بیگ مرزا

1895

انشاء نسواں

ع ف خانم

1919

انشائے سرور

رجب علی بیگ سرور

1887

انشای اردو

مولوی کریم الدین

  

Go to: