اب تو فراق صبح میں بجھنے لگی حیات

عبید اللہ علیم

اب تو فراق صبح میں بجھنے لگی حیات

عبید اللہ علیم

MORE BYعبید اللہ علیم

    اب تو فراق صبح میں بجھنے لگی حیات

    بار الٰہ کتنے پہر رہ گئی ہے رات

    ہر تیرگی میں تو نے اتاری ہے روشنی

    اب خود اتر کے آ کہ سیہ تر ہے کائنات

    کچھ آئینے سے رکھے ہوئے ہیں سر وجود

    اور ان میں اپنا جشن مناتی ہے میری ذات

    بولے نہیں وہ حرف جو ایمان میں نہ تھے

    لکھی نہیں وہ بات جو اپنی نہیں تھی بات

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    عبید اللہ علیم

    عبید اللہ علیم

    مآخذ
    • کتاب : Chand Chehra Sitara Aankhen (Pg. 159)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY