بجٹ میں نے دیکھے ہیں سارے ترے

انور مسعود

بجٹ میں نے دیکھے ہیں سارے ترے

انور مسعود

MORE BY انور مسعود

    بجٹ میں نے دیکھے ہیں سارے ترے

    انوکھے انوکھے خسارے ترے

    اللے تللے ادھارے ترے

    بھلا کون قرضے اتارے ترے

    گرانی کی سوغات حاصل مرا

    محاصل ترے گوشوارے ترے

    مشیروں کا جمگھٹ سلامت رہے

    بہت کام جس نے سنوارے ترے

    مری سادہ لوحی سمجھتی نہیں

    حسابی کتابی اشارے ترے

    کئی اصطلاحوں میں گوندھے ہوئے

    کنائے ترے استعارے ترے

    تو اربوں کی کھربوں کی باتیں کرے

    عدد کون اتنے شمارے ترے

    تجھے کچھ غریبوں کی پروا نہیں

    وڈیرے ہیں پیارے دلارے ترے

    ادھر سے لیا کچھ ادھر سے لیا

    یونہی چل رہے ہیں ادارے ترے

    مآخذ:

    • Book : Anwar Masood Se Khalid Masood Tak (Pg. 14)
    • Author : Hassan Abbasi
    • مطبع : Nastaleeq Matbuaat (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY