بکھیرتا ہے قیاس مجھ کو

عزیز نبیل

بکھیرتا ہے قیاس مجھ کو

عزیز نبیل

MORE BYعزیز نبیل

    بکھیرتا ہے قیاس مجھ کو

    سمیٹ لیتی ہے آس مجھ کو

    میں چھپ رہا ہوں کہ جانے کس دم

    اتار ڈالے لباس مجھ کو

    دکھا گئی ہے سراب سارے

    بس ایک لمحے کی پیاس مجھ کو

    میں مل ہی جاؤں گا ڈھونڈ لیجے

    یہیں کہیں آس پاس مجھ کو

    جو تم نہیں ہو تو لگ رہا ہے

    ہر ایک منظر اداس مجھ کو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY