چراغ دنیا کے سارے بجھا کے چلتا ہوں

خلیل مامون

چراغ دنیا کے سارے بجھا کے چلتا ہوں

خلیل مامون

MORE BYخلیل مامون

    چراغ دنیا کے سارے بجھا کے چلتا ہوں

    اندھیری رات میں اک دل جلا کے چلتا ہوں

    دکھائی دیتا ہے دروازۂ فنا مجھ کو

    میں سب حجاب نظر سے اٹھا کے چلتا ہوں

    دکھائی دیتے ہیں سارے خزانے دھرتی کے

    میں سارے سنگ رہوں کے ہٹا کے چلتا ہوں

    علم میں سر میرا کوئی اٹھائے گا کیوں کر

    میں خوان عزم میں سر کو سجا کے چلتا ہوں

    مجھے پہنچنا ہے بس اپنے آپ کی حد تک

    میں اپنی ذات کو منزل بنا کے چلتا ہوں

    مآخذ:

    • کتاب : Sanson Ke Paar (Pg. 220)
    • Author : Khalil Mamoon
    • مطبع : Educational Publishing House, Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY