چھوڑ کر مجھ کو چلی اے بے وفا میں بھی تو ہوں

شرف مجددی

چھوڑ کر مجھ کو چلی اے بے وفا میں بھی تو ہوں

شرف مجددی

MORE BYشرف مجددی

    چھوڑ کر مجھ کو چلی اے بے وفا میں بھی تو ہوں

    لے خبر میری بھی اے تیغ ادا میں بھی تو ہوں

    پی رہے ہیں سب پیالی پر پیالی بزم میں

    میری باری بھی تو آئے ساقیا میں بھی تو ہوں

    ذکر جب حور و پری کا سامنے ان کے ہوا

    پہلے تو سنتے رہے وہ پھر کہا میں بھی تو ہوں

    دخت رز زاہد سے بولی مجھ سے گھبراتے ہو کیوں

    کیا تمہیں ہو پاک دامن پارسا میں بھی تو ہوں

    خاص زاہد کے لئے جنت تو ہو سکتی نہیں

    آخر اک بندہ شرفؔ اللہ کا میں بھی تو ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY