حادثے پیار میں ایسے بھی تو ہو جاتے ہیں

خالد ملک ساحل

حادثے پیار میں ایسے بھی تو ہو جاتے ہیں

خالد ملک ساحل

MORE BYخالد ملک ساحل

    حادثے پیار میں ایسے بھی تو ہو جاتے ہیں

    رتجگے خیمۂ تسکین میں ہو جاتے ہیں

    بعض اوقات ترا نام بدل جاتا ہے

    بعض اوقات ترے نقش بھی کھو جاتے ہیں

    چلتے چلتے کسی رستے کے کنارے پہ کہیں

    یاد کے پھول مسافت میں پرو جاتے ہیں

    تجھ کو دیکھا ہے تو آثار نظر آئے ہیں

    تجھ کو دیکھا ہے تو ماضی کو بھی رو جاتے ہیں

    ہم چلے جاتے ہیں اس شہر کے جنگل سے کہیں

    تم ہمیں درد کی خیرات تو دو جاتے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY