ہے وصف ترا محیط اعظم (ردیف .. ی)

اسماعیل میرٹھی

ہے وصف ترا محیط اعظم (ردیف .. ی)

اسماعیل میرٹھی

MORE BYاسماعیل میرٹھی

    ہے وصف ترا محیط اعظم

    یاں تاب کسے شناوری کی

    دی زندگی اور اس کا ساماں

    کیا شان ہے بندہ پروری کی

    شاہنشہ وقت ہے وہ جس نے

    تیرے در کی گداگری کی

    بد تر ہوں ولے کرم سے تیرے

    امید قوی ہے بہتری کی

    کیا آنکھ کو تل دیا کہ جس میں

    وسعت ہے چرخ چنبری کی

    دیکھا تو وہی ہے راہ و رہرو

    پھر اس نے ہے آپ رہبری کی

    ہر شکل میں تھا وہی نمودار

    ہم نے ہی نگاہ سرسری کی

    کیا بات ہے گر کیا ترحم

    ہیہات جو تو نے داوری کی

    کی بعد خزاں بہار پیدا

    سوکھی ٹہنی ہری بھری کی

    جھوٹ اور مبالغہ نے افسوس

    عزت کھو دی سخنوری کی

    لکھی تھی غزل یہ آگرہ میں

    پہلی تاریخ جنوری کی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY