اس عشق و جنوں میں نہ گریبان کا ڈر ہے

مصحفی غلام ہمدانی

اس عشق و جنوں میں نہ گریبان کا ڈر ہے

مصحفی غلام ہمدانی

MORE BYمصحفی غلام ہمدانی

    اس عشق و جنوں میں نہ گریبان کا ڈر ہے

    یہ عشق وہ ہے جس میں ہمیں جان کا ڈر ہے

    آساں نہیں دریائے محبت سے گزرنا

    یاں نوح کی کشتی کو بھی طوفان کا ڈر ہے

    بازار سے گزرے ہے وہ بے پردہ کہ اس کو

    ہندو کا نہ خطرہ نہ مسلمان کا ڈر ہے

    دل خون میں تڑپے ہے ترے تیر نگہ سے

    پر اس پہ بھی ظالم ترے پیکان کا ڈر ہے

    دربان بھی یاں کچے گھڑے پانی بھرے ہے

    وہ ہیں ہمیں یاں جن کو کہ دربان کا ڈر ہے

    وہ شوخ کہیں وقت نماز آن نہ نکلے

    اے مصحفیؔ مجھ کو اسی شیطان کا ڈر ہے

    مآخذ:

    • کتاب : kulliyat-e-mas.hafii(Vol-4)(pdf) (Pg. 275)
    • Author : Ghulam hamdani Mashafi
    • مطبع : Qaumi council baraye -farogh urdu (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY