جسم کے مرتبان میں کیا ہے

عبدالصمد تپشؔ

جسم کے مرتبان میں کیا ہے

عبدالصمد تپشؔ

MORE BYعبدالصمد تپشؔ

    جسم کے مرتبان میں کیا ہے

    روح ہے بس مکان میں کیا ہے

    روح کیا ہے خدا کو ہے معلوم

    اپنے وہم و گمان میں کیا ہے

    اک جنوں ہے جو ساتھ چلتا ہے

    کشتی و بادبان میں کیا ہے

    اس کو میری انا سے جھگڑا ہے

    ورنہ میری زبان میں کیا ہے

    بے گناہوں کے خوں کا پیاسا تیر

    اور اس کی کمان میں کیا ہے

    ایک وعدہ جو سب سے سستا ہے

    اور دینے کو دان میں کیا ہے

    کچھ حقائق کے زندہ پیکر ہیں

    لفظ میں کیا بیان میں کیا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Mata-e-Aainda (Pg. 17)
    • Author : Abdussamad Tapish
    • مطبع : Abdussamad Tapish (2000)
    • اشاعت : 2000

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے