کوئی ملا تو کسی اور کی کمی ہوئی ہے

عرفان ستار

کوئی ملا تو کسی اور کی کمی ہوئی ہے

عرفان ستار

MORE BYعرفان ستار

    کوئی ملا تو کسی اور کی کمی ہوئی ہے

    سو دل نے بے طلبی اختیار کی ہوئی ہے

    جہاں سے دل کی طرف زندگی اترتی تھی

    نگاہ اب بھی اسی بام پر جمی ہوئی ہے

    ہے انتظار اسے بھی تمہاری خوش بو کا

    ہوا گلی میں بہت دیر سے رکی ہوئی ہے

    تم آ گئے ہو تو اب آئینہ بھی دیکھیں گے

    ابھی ابھی تو نگاہوں میں روشنی ہوئی ہے

    ہمارا علم تو مرہون لوح دل ہے میاں

    کتاب عقل تو بس طاق پر دھری ہوئی ہے

    بناؤ سائے حرارت بدن میں جذب کرو

    کہ دھوپ صحن میں کب سے یونہی پڑی ہوئی ہے

    نہیں نہیں میں بہت خوش رہا ہوں تیرے بغیر

    یقین کر کہ یہ حالت ابھی ابھی ہوئی ہے

    وہ گفتگو جو مری صرف اپنے آپ سے تھی

    تری نگاہ کو پہنچی تو شاعری ہوئی ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    سلمان علوی

    سلمان علوی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    کوئی ملا تو کسی اور کی کمی ہوئی ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY