کنج غزل نہ قیس کا ویرانہ چاہئے

عباس تابش

کنج غزل نہ قیس کا ویرانہ چاہئے

عباس تابش

MORE BYعباس تابش

    کنج غزل نہ قیس کا ویرانہ چاہئے

    جو غم مجھے ہے اس کو عزا خانہ چاہئے

    ہے جس کا انتظار پلک سے فلک تلک

    اب آنا چاہئے اسے آ جانا چاہئے

    یارب مرے لباس سے ہرگز گماں نہ ہو

    لیکن مجھے مزاج فقیرانہ چاہئے

    ملتی نہیں ہے ناؤ تو درویش کی طرح

    خود میں اتر کے پار اتر جانا چاہئے

    اے دوست! مجھ سے عشق کی یکسانیت نہ پوچھ

    تو بھی کبھی کبھی مجھے بیگانہ چاہئے

    مأخذ :
    • کتاب : Ishq Abaad (kulliyat) (Pg. 707)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے