مجھ سے کہا جبریل جنوں نے یہ بھی وحی الٰہی ہے

مجروح سلطانپوری

مجھ سے کہا جبریل جنوں نے یہ بھی وحی الٰہی ہے

مجروح سلطانپوری

MORE BYمجروح سلطانپوری

    مجھ سے کہا جبریل جنوں نے یہ بھی وحی الٰہی ہے

    مذہب تو بس مذہب دل ہے باقی سب گمراہی ہے

    وہ جو ہوئے فردوس بدر تقصیر تھی وہ آدم کی مگر

    میرا عذاب در بدری میری نا کردہ گناہی ہے

    سنگ تو کوئی بڑھ کے اٹھاؤ شاخ ثمر کچھ دور نہیں

    جس کو بلندی سمجھے ہو ان ہاتھوں کی کوتاہی ہے

    پھر کوئی منظر پھر وہی گردش کیا کیجے اے کوئے نگار

    میرے لیے زنجیر گلو میری آوارہ نگاہی ہے

    بہر خدا خاموش رہو بس دیکھتے جاؤ اہل نظر

    کیا لغزیدہ قدم ہیں اس کے کیا دزدیدہ نگاہی ہے

    دید کے قابل ہے تو سہی مجروحؔ تری مستانہ روی

    گرد ہوا ہے رخت سفر رستے کا شجر ہمراہی ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مجروح سلطانپوری

    مجروح سلطانپوری

    RECITATIONS

    مجروح سلطانپوری

    مجروح سلطانپوری

    مجروح سلطانپوری

    مجھ سے کہا جبریل جنوں نے یہ بھی وحی الٰہی ہے مجروح سلطانپوری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY