مسلسل بیکلی دل کو رہی ہے

ناصر کاظمی

مسلسل بیکلی دل کو رہی ہے

ناصر کاظمی

MORE BY ناصر کاظمی

    مسلسل بیکلی دل کو رہی ہے

    مگر جینے کی صورت تو رہی ہے

    میں کیوں پھرتا ہوں تنہا مارا مارا

    یہ بستی چین سے کیوں سو رہی ہے

    چلے دل سے امیدوں کے مسافر

    یہ نگری آج خالی ہو رہی ہے

    نہ سمجھو تم اسے شور بہاراں

    خزاں پتوں میں چھپ کر رو رہی ہے

    ہمارے گھر کی دیواروں پہ ناصرؔ

    اداسی بال کھولے سو رہی ہے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    مسلسل بیکلی دل کو رہی ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY