سبھی کو اپنا سمجھتا ہوں کیا ہوا ہے مجھے

آشفتہ چنگیزی

سبھی کو اپنا سمجھتا ہوں کیا ہوا ہے مجھے

آشفتہ چنگیزی

MORE BYآشفتہ چنگیزی

    سبھی کو اپنا سمجھتا ہوں کیا ہوا ہے مجھے

    بچھڑ کے تجھ سے عجب روگ لگ گیا ہے مجھے

    جو مڑ کے دیکھا تو ہو جائے گا بدن پتھر

    کہانیوں میں سنا تھا سو بھوگنا ہے مجھے

    میں تجھ کو بھول نہ پایا یہی غنیمت ہے

    یہاں تو اس کا بھی امکان لگ رہا ہے مجھے

    میں سرد جنگ کی عادت نہ ڈال پاؤں گا

    کوئی محاذ پہ واپس بلا رہا ہے مجھے

    سڑک پہ چلتے ہوئے آنکھیں بند رکھتا ہوں

    ترے جمال کا ایسا مزہ پڑا ہے مجھے

    ابھی تلک تو کوئی واپسی کی راہ نہ تھی

    کل ایک راہ گزر کا پتہ لگا ہے مجھے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    سبھی کو اپنا سمجھتا ہوں کیا ہوا ہے مجھے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY