تری گالی مجھ دل کو پیاری لگے

فائز دہلوی

تری گالی مجھ دل کو پیاری لگے

فائز دہلوی

MORE BYفائز دہلوی

    تری گالی مجھ دل کو پیاری لگے

    دعا میری تجھ من میں بھاری لگے

    تدی قدر عاشق کی بوجھے سجن

    کسی ساتھ اگر تجھ کوں یاری لگے

    بھلا دیوے وو عیش و آرام سب

    جسے زلف سیں بے قراری لگے

    نہیں تجھ سا اور شوخ اے من ہرن

    تری بات دل کو نیاری لگے

    بھواں تیری شمشیر زلفاں کمند

    پلک تیری جیسے کٹاری لگے

    ہوئے سرو بازار دامن کا دیکھ

    اگر گرد دامن کناری لگے

    نہ جانوں تو ساقی تھا کس بزم کا

    نین تیری مجھ کوں خماری لگے

    وہی قدر فائزؔ کی جانے بہت

    جسے عشق کا زخم کاری لگے

    مآخذ:

    • کتاب : Intekhab Kalam (Pg. 61)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY