ٹوٹا ہے پرانا سادہ پل لفظوں کا

خلیل مامون

ٹوٹا ہے پرانا سادہ پل لفظوں کا

خلیل مامون

MORE BYخلیل مامون

    ٹوٹا ہے پرانا سادہ پل لفظوں کا

    اب رشتہ ہے دنیا سے فقط آنکھوں کا

    وہ بھول گئے ہیں تو عجب کیا اس میں

    تھا کھیل یہ تو گزرے ہوئے لمحوں کا

    اک لمحہ میں سب ختم ہے ماضی ہو کہ حال

    یادوں کا خزانہ تھا بہت برسوں کا

    سب لوگ ہمیں ایک نظر آتے ہیں

    اندازہ نہیں ہوتا ہے اب چہروں کا

    مامونؔ ہیں باتیں ہوا کا جھونکا

    ہم کو تو بھروسہ ہی نہیں باتوں کا

    مآخذ:

    • کتاب : Sanson Ke Paar (Pg. 235)
    • Author : Khalil Mamoon
    • مطبع : Educational Publishing House, Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY