وہ معرکہ کہ آج بھی سر ہو نہیں سکا

امیر امام

وہ معرکہ کہ آج بھی سر ہو نہیں سکا

امیر امام

MORE BYامیر امام

    وہ معرکہ کہ آج بھی سر ہو نہیں سکا

    میں تھک کے مسکرا دیا جب رو نہیں سکا

    اس بار یہ ہوا تری یادوں کی بھیڑ میں

    ہر گام خود کو مل گیا میں کھو نہیں سکا

    جاگا ہوں گہری نیند سے لیکن عجیب بات

    یہ لگ رہا ہے جیسے کہ میں سو نہیں سکا

    اگ آئی گھاس عشق کے ملبے پہ ہر طرف

    ہم دونوں میں سے کوئی اسے دھو نہیں سکا

    جادو نگر ہے کوئی مرا اندروں جہاں

    ہوتا رہا ہے وہ جو کبھی ہو نہیں سکا

    RECITATIONS

    امیر امام

    امیر امام

    امیر امام

    وہ معرکہ کہ آج بھی سر ہو نہیں سکا امیر امام

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY