وہ نہیں اس کی مگر جادوگری موجود ہے

ظفر اقبال ظفر

وہ نہیں اس کی مگر جادوگری موجود ہے

ظفر اقبال ظفر

MORE BYظفر اقبال ظفر

    وہ نہیں اس کی مگر جادوگری موجود ہے

    اک سحر آلود مجھ میں بے خودی موجود ہے

    صف بہ صف دشمن ہی دشمن ہیں مرے چاروں طرف

    حوصلہ دیکھو کہ پھر بھی زندگی موجود ہے

    بجھ گئی ہے بستیوں کی آگ اک مدت ہوئی

    ذہن میں لیکن ابھی تک شعلگی موجود ہے

    باد صرصر چل رہی ہے اور اس کے باوجود

    پھر بھی شمعوں میں ابھی تک روشنی موجود ہے

    ہے عجب اعجاز یہ اس کی محبت کا ظفرؔ

    جاگتی آنکھوں میں خواب زندگی موجود ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY