admi nama

मुजतबा हुसैन

हुसामी बुकडिपो, हैदराबाद
1981 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

مجتبیٰ حسین اردو طنز و مزاح نگاری اور خاکہ نگاری میں محتاج تعارف نہیں ہے۔"آدمی نامہ" ان کے خاکوں کا پہلا مجموعہ ہے۔کتاب کا نام نظیر اکبر آبادی کی ایک نظم سے اخذ کیا گیا ہے ۔جس کی وجہ خود مجتبیٰ حسین بتاتے ہیں کہ "نظیر اکبرآبادی نے آج سے سوا سوبرس پہلے جس قسم کے آدمی اپنی نظم میں پیش کیے تھے ،اسی قماش کے آدمی آج بھی پیدا ہوتے ہیں۔" زیر نظر مجموعہ میں شامل خاکے مجتبیٰ حسین کے دوست واحباب پر لکھے گئے ہیں۔انھوں نے اپنے شاہکار خاکوں میں شخصیت شناسی کی بنیادی اوصاف پیش کئے ہیں۔ایک ماہر نفسیات کی طرح ممدوحین کے باطن تک پہنچ کر ان کی خوبیوں اور خامیوں کو طنز ومزاحیہ پیرائیہ میں اجاگر کیا ہے۔جدید مزاحیہ خاکہ نگاروں میں مجتبیٰ حسین اس لحاظ سے ممتا زہیں کہ انھوں نے نہ صرف مزاحیہ خاکہ نگاری میں نئے ابعاد جوڑکر اسے آگے بڑھایا بلکہ اس خوبصورت روایت کی پاسداری بھی کی جس کی بنیاد مرزا فرحت اللہ بیگ نے ڈالی تھی۔زیر نظر مجموعہ میں شامل خاکوں کے نام بھی کتاب کا عنوان "آدمی نامہ "کی مناسبت سے دلچسپ اور موثرہیں۔جو ممدوحین کی شخصیت و فن کے عکاس ہیں۔جیسے کنہالال کپور۔۔لمبا آدمی،راجندر سنگھ بیدی۔۔۔سو ہے وہ بھی آدمی،مخدوم محی الدین۔۔۔یادوں میں بسا آدمی۔رضا نقوی واہی ۔۔۔منظوم آدمی وغیرہ۔ کتاب میں شعر ادب کی ممتاز شخصیتوں پر کل 15 خاکے شامل ہیں۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम