علامہ اقبال : تقریریں، تحریریں اور بیانات

علامہ اقبال

محمد سہیل عمر
1999 | مزید
  • معاون

    غالب انسٹی ٹیوٹ، ئی دہلی

  • مترجم

    اقبال احمد صدیقی

  • ISBN نمبر /ISSN نمبر

    969-416-043-x
  • موضوعات

    ترجمہ

  • صفحات

    345

کتاب: تعارف

تعارف

یہ کتاب علامہ اقبال کی متفرق نثری تحریروں کا مجموعہ ہے جو ان کی تقریروں ، تحریروں اور بیانات پر مبنی ہے۔ علامہ اقبال کی ادبی باقیات میں دو صدارتی خطبات ، کچھ تقریریں جو انہوں نے پنجاب لیحس لیٹو کونسل میں ارشاد فرمائیں اور کچھ اخباری بیانات جو حالات حاضرہ پر جاری کئے ۔ چند چھوٹے چھوٹے کتابچوں ، پنجاب لیحس لیٹو کونسل کے مباحث اور اخبارات کی پرانی فائلوں میں بکھرے پڑے تھے، کو اس کتاب میں یکجا کر کے اردو ترجمہ کر دیا گیا ہے۔ اس میں سیاسی مباحث سے لیکر دینی بیانا ت اور ادبی مکالمے بھی شامل ہیں ۔ اقبال بنیادی طور پر ایک وکیل اور فلسفی تھے مگر انہوں نے خود کو سیاسی اور مذہبی میدان سے جوڑنے کی برح پور کوشش کی ہے اور ادب کا سہارا لیکر اس سلسلے میں کسی نہ کسی حد تک کامیاب بھی نظر آتے ہیں ۔ اقبال کی شعری صلاحیتوں کے سب ہی قائل ہیں مگر ان کی نثر کیسی ہے اس پر بات کم ہی ہوتی ہے ۔ اس کتاب میں ان کی نثری صلاحیت کو اجاگر کرنے کی کوشش کی گئی ہے جو یقینا قاری کو پسند آئے گی۔

.....مزید پڑھئے

مصنف: تعارف

علامہ اقبال

نام محمداقبال، ڈاکٹر ،سر، تخلص اقبال۔ لقب ’’حکیم الامت‘‘، ’’ترجمان حقیقت‘‘، ’’مفکراسلام‘‘ اور ’’شاعر مشرق‘‘۔ ۹؍نومبر ۱۸۷۷ء کو سیالکوٹ میں پیدا ہوئے۔ایف اے مرے کالج، سیالکوٹ سے کیا۔ عربی، فارسی ادب اور اسلامیات کی تعلیم مولوی میر حسن سے حاصل کی۔۱۸۹۵ء میں لاہور آگئے۔ بی اے اور ایم اے کی ڈگریاں لینے کے بعد گورنمنٹ کالج، لاہور میں فلسفے کے پروفیسر ہوگئے۔۱۹۰۵ء میں بیرسٹری کی تعلیم کے لیے انگلستان چلے گئے۔ وہاں قانون کے ساتھ فلسفے کی تعلیم بھی جاری رکھی۔ہائیڈل برگ(میونخ) یونیورسٹی میں ’’ایران میں مابعد الطبیعیات کا ارتقا‘‘ پر مقالہ لکھ کر ڈاکٹریٹ کی سند حاصل کی۔
۱۹۲۲ء میں ان کی اعلا قابلیت کے صلے میں ’’سر‘‘ کا خطاب ملا۔ ۱۹۲۷ء میں پنجاب کی مجلس مقننہ کے ممبر چنے گئے۔۱۹۳۰ء میں مسلم لیگ کے صدر منتخب ہوئے۔اقبال نے شروع میں کچھ غزلیں ارشد گورگانی کو دکھائیں۔ داغ سے بذریعہ خط کتابت بھی تلمذ رہا۔ اقبال بیسویں صدی کے اردو کے سب سے بڑے شاعر ہیں۔ان کے اردو مجموعہ ہائے کلام کے نام یہ ہیں: ’’بانگ دار‘‘، ’’بال جبریل‘‘، ’’ضرب کلیم‘‘،’’ارمغان حجاز‘‘(اردو اور فارسی کلام)۔ ’’کلیات اقبال‘‘ اردو بھی چھپ گئی ہے ۔ فارسی تصانیف کے نام یہ ہیں:’’اسرار خودی‘‘، ’’رموز بے خودی‘‘، ’’پیام مشرق‘‘، ’’زبور عجم‘‘، ’’جاوید نامہ‘‘، ’’مسافر‘‘، ’’پس چہ باید کرد‘‘۔ ۲۱؍اپریل ۱۹۳۸ء کو دنیا سے رخصت ہوگئے۔

بحوالۂ:پیمانۂ غزل(جلد اول)،محمد شمس الحق،صفحہ:270

.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مزید

مقبول و معروف

مزید

کتابوں کی تلاش بہ اعتبار

کتابیں : بہ اعتبار موضوع

شاعری کی کتابیں

رسالے

کتاب فہرست

مصنفین کی فہرست

یونیورسٹی اردو نصاب