کشمیر

چراغ حسن حسرت

1948 | مزید

کتاب: تعارف

تعارف

کشمیر کے متعلق کئی کتابیں لکھی گئی ہیں۔جس میں کسی نے اس خطے کی خوبصورتی، تو کسی نے حسین مناظر ،تو کسی نے اس کی سیاسی،سماجی ،معاشرتی اور تاریخی حالات کا تذکرہ کیاہے۔ زیر مطالعہ تالیف بھی اسی خوبصورت وادی سے متعلق ہے۔جس میں مولف چراغ حسن حسرت نے کشمیر کی پوری تاریخ سیدھے سادے انداز میں بیان کی ہے۔جس کے لیے انھوں نے کئی اہم کتابوں سے مدد بھی لی ہے۔البتہ سیاسی جدو جہد کے سلسلہ میں چراغ حسن حسرت نے اپنی معلومات پر اکتفا کیا ہے۔

.....مزید پڑھئے

مصنف: تعارف

چراغ حسن حسرت

چراغ حسن حسرت

چراغ حسن حسرت کا شمار بیسویں صدی کے ان جید ادیبوں ، شاعروں اور صحافیوں میں ہوتا ہے جنہوں نے اپنے عہد پر دیر پا نقوش مرتب کئے۔ ان کی پیدائش 1904 کو پونچھ (کشمیر) میں ہوئی ۔ فارسی اردو اور عربی کی ابتدائی تعلیم گھر پر حاصل کی ، پونچھ میں میٹرک کیا اور لاہور سے بی، اے کا امتحان پاس کیا۔ اس کے بعد ’زمیندار‘ ’انصاف‘ اور ’احسان‘ جیسے اہم اخبارات سے وابستہ ہوکر صحافیانہ سرگرمیوں میں شامل ہوگئے۔

دوسری عالمی جنگ کے دوران حسرت ’فوجی اخبار‘ کے مدیر بھی رہے۔ روزمانہ ’امروز‘ میں حسرت نے ’سند باد جہازی‘ کے نام سے مذاحیہ کالم لکھے جو اس وقت بہت مقبول ہوئے اور بہت دلچسپی کے ساتھ پڑھے گئے۔ حسرت زندگی بھر اس قدر متنوع علمی اور تحقیقی کاموں میں لگے رہے کہ انہیں شاعری کے لئے کم وقت مل سکا۔ انہوں نے مسلمانوں کے عروج و زوال کی ’سرگذشت اسلام‘ کے نام سے کئی جلدوں پر مشتمل تاریخ لکھی۔ اسی کے ساتھ قائد اعظم محمد علی جناح اور اقبال پر ان کی کتابیں اپنے علمی اور فکری مباحث اور استدلال کی وجہ سے آج بھی اہمیت کی حامل تصور کی جاتی ہیں۔ 26 جون 1955 کو لاہور میں انتقال ہوا۔



.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مزید

مقبول و معروف

مزید

کتابوں کی تلاش بہ اعتبار

کتابیں : بہ اعتبار موضوع

شاعری کی کتابیں

رسالے

کتاب فہرست

مصنفین کی فہرست

یونیورسٹی اردو نصاب