خلافت و ملوکیت

ابوالاعلیٰ مودودی

مرکزی مکتبہ اسلامی، دہلی
1974 | مزید
  • معاون

    گورو جوشی

  • موضوعات

    اسلامیات

  • صفحات

    328

کتاب: تعارف

تعارف

خلافت و ملوکیت ابو العلی مودودی کی مشہور ترین کتابوں میں سے ایک ہے۔ اس کتاب میں انہوں نے خلافت اسلامی کے مسائل پر گفتگو کی ہے اور یہ بتانے کی کوشش کی ہے کہ کامیاب حکومتی انتظام خلافت اولی کے طرق پر عمل کر کے کی جا سکتی ہے۔ جس طرح سے خلافت راشدہ کے زمانے میں ہر ایک کے اپنے حقوق ہوا کرتے تھے خلیفہ سے سوال و جواب کی اجازت ہوا کرتی تھی اسی طرح کا نظام اس کائنات کے لئے بہتر نظام ہے ۔ اس کے مقابلہ میں ملوکیت جو کہ ایک بادشاہی نظام ہے اس میں بہت سی خامیاں ہیں اور اس کی وجہ بادشاہ کے انتخابی اصول میں تبدیلی ہے اگر بادشاہی اصول بھی خلافت کے اصول کی طرح اپنے نائب کو چنتے ہیں تو اس نظام میں بھی بہتری آ سکتی ہے مگر ایسا ہونا ناممکن ہے ۔اس لئے دنیا کے سامنے صرف ایک اسوہ بچتا ہے اور وہ ہے خلافت راشدہ کا اسوہ۔ اس میں انہوں نے اسلام کے اصول حکمرانی، خلافت راشدہ اور اس کی خصوصیات ،خلافت راشدہ سے ملوکیت تک، خلافت اور ملوکیت کا فرق وغیرہ عنوان کے تحت سیر حاصل بحث کی ہے۔ یہ کتاب بہت ہی زیادہ مشہور اور مختلف فیہ رہی ہے ۔ اس لئے اگر مودودی کے نظریات کو جاننا ہے تو اس کتاب کا مطالعہ نہایت ہی انہماک سے کیا جانا چاہئے۔

.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مزید

مقبول و معروف

مزید

کتابوں کی تلاش بہ اعتبار

کتابیں : بہ اعتبار موضوع

شاعری کی کتابیں

رسالے

کتاب فہرست

مصنفین کی فہرست

یونیورسٹی اردو نصاب