نعت اور اسلام

وحیدہ نسیم

غضنفر اکیڈمی، پاکستان، کراچی
1982 | مزید

مصنف: تعارف

وحیدہ نسیم

وحیدہ نسیم

وحیدہ نسیم نے عثمانیہ گرلز کالج حیدرآباد دکن سے 1951 میں نباتیات میں ایم ایس سی کیا اور 1952 میں پاکستان منتقل ہوگئیں۔ وہ نباتیاب کی تدریس کے شعبے سے وابستہ تھیں اور 1987 میں کراچی کے ایک کالج سے پرنسپل کی حیثیت سے ریٹائر ہوئی۔ وہ شاعرہ، ناول و افسانہ نگار اور محقق تھیں۔ اپنے زمانے کی بہت مشہور شاعرہ تھیں۔ ترقی پسند دور کے عروج کے زمانے میں شاعری شروع کی تھی۔ ان کی غزلیں اور نظمیں اپنے عہد کی مؤثر اور سچی تصویریں ہیں۔ ان کا ننہیال ہندوستاں کے مشہور قصبےکاکوری میں تھا۔ برسوں بعد جب وہ وہاں گئیں تب انھوں نے‘مرثیہ کارکوری’ لکھا۔ 
متعدد کتابوں کی مصنف ہیں: ’موج نسیم‘، ’نعت و سلام‘، ’مرثیہ کاکوری‘ (شاعری)۔ ’ناگ منی‘ ،’راج محل‘، ’رنگ محل‘ اور’دیپ‘ (افسانوی مجموعے)۔ ’اورنگ آباد: ’ملک عنبر سے اورنگ زیب تک‘، ’عورت اور اردو زبان‘ اور ’شاہان ہے تاج‘ (تنقید)۔ ’داستاں در داستاں‘، ’ساحل کی تمنا‘، ’غم دل کہا نہ جائے‘، ’شبو رانی‘، ’زخم حیات‘ (ناول)۔ انہوں نے پاکستان ٹیلی وژن کے لئے کئی ڈرامے بھی تحریر کئے جبکہ ان کی ایک کہانی پر ناگ منی نامی فلم بھی بنائی گئی تھی۔

.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مزید

مقبول و معروف

مزید

کتابوں کی تلاش بہ اعتبار

کتابیں : بہ اعتبار موضوع

شاعری کی کتابیں

رسالے

کتاب فہرست

مصنفین کی فہرست

یونیورسٹی اردو نصاب