सिंध में उर्दू

शाहिदा बेग़म

उर्दू अकेडमी सिंध, कराची
1980 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

اردو میں چند کتابیں ایسی تصنیف ہوئی ہیں جن کا نام کچھ اس طرسے ہوتا ہے پنجاب میں اردو ، دکن میں اردو، بنگال میں اردو ، گجرات میں اردواور بلوچستان میں اردو وغیرہ ۔ اسی نوعیت کی یہ کتاب ’’ سندھ میں اردو ‘‘ ہے ۔ دیگر کتابوں کی طرح اس میں بھی علاقائی طور اردو زبان و ادب کی روداد کو پیش کیا گیا ہے۔ اردو کے معاملے میں تو سندھ مختلف فیہ رہا ہے کیونکہ مسلمانوں کی آمد پہلے سندھ رہی پھر باقی ہندو ستان ۔ محمد بن قاسم کے بعد ایک عہد تک سندھ کی سرکاری زبان عربی رہی، پھر دیگر مسلمان بادشاہوں کے زمانے میں فارسی ۔ اس طریقے سے کہا جاتا رہا ہے کہ اردو زبان کا کچا مال سندھ میں تیار ہوچکا تھا جبکہ دلی ونواح دلی میں یہ زبان تیار ہوتی ہے ۔ خیر ! اس کتاب میں مصنفہ نے شروع میں سندھ کے تاریخی، تہذیبی و لسانی پس منظر کو بیان کیاہے ۔ پھر سندھ میں اردو کے سرپرست خانوادوں کا ذکر ہے ۔ سندھ میں اردو کے علمی و ادبی ذخائر و رسائل ، پاکستان کے قیام سے پہلے اردو شاعری و نثر کی تاریخ، پھر قیام پاکستان کے بعد سندھ میں اردو کی صورت حال کا ذکر ہے ۔

.....और पढ़िए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम