Author : Krishn Bihari Noor

Publisher : Krishn Bihari Noor

Year of Publication : 1992

Language : Urdu

Categories : Poetry

Sub Categories : Majmua

Pages : 162

Contributor : Farhat Ehsas

tapasya

About The Book

زیر مطالعہ کرشن بہار نور کا شعری مجموعہ "تپسیا" ہے۔ جو شاعرکے احساس و فکر کاایسا آئینہ ہے جس میں شاعر کے لفظ موتی بن کرروشن ہیں۔ کرشن بہاری نور کی شاعری کے متعلق عرفان صدیقی کہتے ہیں۔" کرشن بہاری نور کی شاعری سچ کی ایک ایسی اکائی ہے جس میں ایک جوگی کا بیراگ ،ایک صوفی کا عرفان، ایک محبت کرنے والے دل کی وسعت اور ایک درد مند انسان کا گداز حل ہوکر ان کا ہنر بنا ہے۔ان کی شاعری اس حقیقت کی سب سے بڑی اور سب سے سچی گواہ ہے کہ شاعر نے اپنے لفظوں کے حسن اور اپنے جذبے کے گداز کا مول اپنے خوابوں اور اپنی امیدوں اور اپنے تجربوں سے چکایا ہے۔" زیر نظر مجموعہ میں نور کی غزلیں اور نظمیں ان کے دل کی آواز ہیں۔ جس میں وصل کی راحیتیں ،ہجر کی تڑپ، سچائی کی تلاش اور خلوص و محبت کا احساس نمایاں ہے۔ان کے یہاں اظہار کا جو سلیقہ اور احساس کی جو شائستگی ملتی ہے اس کا تعلق غزل کی کلاسیکی روایت سے ہے۔ شاعرنے اپنی پیرائیہ اظہار کو معنوی سطح پر پیچیدہ نہ بناتے ہوئے تہہ داری قائم رکھی ہے جو شعری تجربے کو وسیع تر بناتی ہے۔

.....Read more

About The Author

Krishn Bihari 'Noor' was born at Gauss Nagar, Lucknow on 8th November 1926. He did his basic education at home. Later, he was admitted to a high school at Aminabad (U.P). After completing his graduation from Lucknow University, he got employed in the RLO department of Lucknow, where he worked for a long time and retired on 30th Nov 1984 as the Assistant Manager. Noor Saheb, a disciple of Fazal Naqvi and proficient in both, Urdu and Devanagri scripts was basically known for his ghazals in literary circles. His noted works include, Dukh-Sukh (Urdu), Tapasya (Urdu), Samandar Meri Talash Mein (Hindi), Hussainiyat Ki Chaaon Mein, Tajjalli-e-Noor, Aaj Ke Prasidh Shaayar (Edited by Kanhya Lal Nandan), etc. He died while undergoing an operation at a hospital in Ghaziabad on 30th May 2003.

.....Read more

More From Author

Read the author's other books here.

See More

What Others Read

Curious what other readers are upto? Check this list of favorite Urdu books of Rekhta readers.

See More

Popular And Trending Read

Find out most popular and trending Urdu books right here.

See More
Speak Now