اہل دل اور بھی ہیں اہل وفا اور بھی ہیں

ساحر لدھیانوی

اہل دل اور بھی ہیں اہل وفا اور بھی ہیں

ساحر لدھیانوی

MORE BYساحر لدھیانوی

    اہل دل اور بھی ہیں اہل وفا اور بھی ہیں

    ایک ہم ہی نہیں دنیا سے خفا اور بھی ہیں

    ہم پہ ہی ختم نہیں مسلک شوریدہ سری

    چاک دل اور بھی ہیں چاک قبا اور بھی ہیں

    کیا ہوا گر مرے یاروں کی زبانیں چپ ہیں

    میرے شاہد مرے یاروں کے سوا اور بھی ہیں

    سر سلامت ہے تو کیا سنگ ملامت کی کمی

    جان باقی ہے تو پیکان قضا اور بھی ہیں

    منصف شہر کی وحدت پہ نہ حرف آ جائے

    لوگ کہتے ہیں کہ ارباب جفا اور بھی ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY