اور نہ کھٹکا کر بابا

کیول کرشن رشیؔ

اور نہ کھٹکا کر بابا

کیول کرشن رشیؔ

MORE BYکیول کرشن رشیؔ

    اور نہ کھٹکا کر بابا

    اپنے آپ سے ڈر بابا

    چھوڑ چلا جب گھر بابا

    دیکھ نہ اب مڑ کر بابا

    سب کچھ تیرے اندر ہے

    کچھ بھی نہیں باہر بابا

    گھوم نہ یوں کشکول لیے

    صبر سے جھولی بھر بابا

    یہ جینا کیا جینا ہے

    جینا ہے تو مر بابا

    ٹھان لیا سو ٹھان لیا

    اب کیا اگر مگر بابا

    بات رشیؔ کی مان بھی لے

    شام ہوئی چل گھر بابا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY