ہم تو گم ہو گئے حالات کے سناٹے میں

مرغوب علی

ہم تو گم ہو گئے حالات کے سناٹے میں

مرغوب علی

MORE BY مرغوب علی

    ہم تو گم ہو گئے حالات کے سناٹے میں

    ہم نے کچھ بھی نہ سنا رات کے سناٹے میں

    حرف ناکام جہاں ہوتے ہیں ان لمحوں میں

    پھول کھلتے ہیں بہت بات کے سناٹے میں

    شور ہنگامہ صدا طبل و علم نقارے

    ڈوب جاتے ہیں سبھی مات کے سناٹے میں

    رات پڑتے ہی ہر اک روز ابھر آتی ہے

    کس کے رونے کی صدا ذات کے سناٹے میں

    ذہن میں پھولوں کی مانند کھلا کرتے ہیں

    ہم نے وہ پل جو چنے ساتھ کے سناٹے میں

    مآخذ:

    • کتاب : Aadhi Raat Ki Shabnam (Pg. 86)
    • Author : Marghoob Ali
    • مطبع : Takhleeqkar Publishers (2001)
    • اشاعت : 2001

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY