داستان شوق کتنی بار دہرائی گئی

آل احمد سرور

داستان شوق کتنی بار دہرائی گئی

آل احمد سرور

MORE BYآل احمد سرور

    داستان شوق کتنی بار دہرائی گئی

    سننے والوں میں توجہ کی کمی پائی گئی

    فکر ہے سہمی ہوئی جذبہ ہے مرجھایا ہوا

    موج کی شورش گئی دریا کی گہرائی گئی

    حسن بھی ہے مصلحت بیں عشق بھی دنیا شناس

    آپ کی شہرت گئی یاروں کی رسوائی گئی

    ہم تو کہتے تھے زمانہ ہی نہیں جوہر شناس

    غور سے دیکھا تو اپنے میں کمی پائی گئی

    زخم ملتے ہیں علاج زخم دل ملتا نہیں

    وضع قاتل رہ گئی رسم مسیحائی گئی

    گرد اڑائی جو سیاست نے وہ آخر دھل گئی

    اہل دل کی خاک میں بھی زندگی پائی گئی

    میری مدھم لے کا جادو اب بھی باقی ہے سرورؔ

    فصل کے نغمے گئے موسم کی شہنائی گئی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    داستان شوق کتنی بار دہرائی گئی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY