aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

قدم قدم پہ تمنائے التفات تو دیکھ

مصطفی زیدی

قدم قدم پہ تمنائے التفات تو دیکھ

مصطفی زیدی

MORE BYمصطفی زیدی

    قدم قدم پہ تمنائے التفات تو دیکھ

    زوال عشق میں سوداگروں کا ہات تو دیکھ

    بس ایک ہم تھے جو تھوڑا سا سر اٹھا کے چلے

    اسی روش پہ رقیبوں کے واقعات تو دیکھ

    غم حیات میں حاضر ہوں لیکن ایک ذرا

    نگار شہر سے میرے تعلقات تو دیکھ

    خود اپنی آنچ میں جلتا ہے چاندنی کا بدن

    کسی کے نرم خنک گیسوؤں کی رات تو دیکھ

    عطا کیا دل مضطر تو سی دیئے میرے ہونٹ

    خدائے کون و مکاں کے توہمات تو دیکھ

    گناہ میں بھی بڑے معرفت کے موقعے ہیں

    کبھی کبھی اسے بے خدشۂ نجات تو دیکھ

    مأخذ:

    Kulliyat-e-Mustafa Zaidi(Mouj meri sadaf sadaf) (Pg. 88)

    • مصنف: Mustafa Zaidi
      • اشاعت: 2011
      • ناشر: Alhamd Publications
      • سن اشاعت: 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے