آنکھوں کے چراغوں میں اجالے نہ رہیں گے

خمارؔ بارہ بنکوی

آنکھوں کے چراغوں میں اجالے نہ رہیں گے

خمارؔ بارہ بنکوی

MORE BYخمارؔ بارہ بنکوی

    آنکھوں کے چراغوں میں اجالے نہ رہیں گے

    آ جاؤ کہ پھر دیکھنے والے نہ رہیں گے

    جا شوق سے لیکن پلٹ آنے کے لیے جا

    ہم دیر تلک خود کو سنبھالے نہ رہیں گے

    اے ذوق سفر خیر ہو نزدیک ہے منزل

    سب کہتے ہیں اب پاؤں میں چھالے نہ رہیں گے

    جن نالوں کی ہو جائے گی تا دوست رسائی

    وہ سانحے بن جائیں گے نالہ نہ رہیں گے

    میں توبہ تو کر لوں مگر اک بات ہے واعظ

    کیا آج سے گردش میں پیالے نہ رہیں گے

    کیوں ظلمت غم ث ہو خمارؔ اتنے پریشان

    بادل یہ ہمیشہ ہی تو کالے نہ رہیں گے

    مأخذ :
    • کتاب : غزل اس نے چھیڑی-6 (Pg. 199)
    • Author : فرحت احساس
    • مطبع : ریختہ بکس ،بی۔37،سیکٹر۔1،نوئیڈا،اترپردیش۔201301 (2019)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے