ہے اختلاف ضروری تمہیں پتا نہیں ہے

وقاص عزیز

ہے اختلاف ضروری تمہیں پتا نہیں ہے

وقاص عزیز

MORE BYوقاص عزیز

    ہے اختلاف ضروری تمہیں پتا نہیں ہے

    چراغ کیسے جلے گا جہاں ہوا نہیں ہے

    تمہارے ہاتھ چھڑانے سے رک گیا ہے سفر

    یہ دھوپ چھاؤں مسافر کا مسئلہ نہیں ہے

    تمہارے جانے سے بے لطف ہو گئی ہر شے

    کہ زہر کھا کے بھی دیکھا ہے ذائقہ نہیں ہے

    میں ڈھونڈ لایا ہوں جب اس کے جیسا دوجا شخص

    سو اب وہ کہنے لگا مجھ سا تیسرا نہیں ہے

    زماں مکاں میں کہیں ہوگا ڈھونڈ لوں گا اسے

    مجھے بس اتنا بتا دو کہ وہ خدا نہیں ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے