ہماری طرح حروف جنوں کے جال میں آ

رفیق راز

ہماری طرح حروف جنوں کے جال میں آ

رفیق راز

MORE BYرفیق راز

    ہماری طرح حروف جنوں کے جال میں آ

    کبھی تو جلوہ گہہ نون جیم دال میں آ

    ابھی تو گرد زمانے کی اڑ رہی ہے یہاں

    ابھی نہ مثل صبا کوچۂ خیال میں آ

    گزر نہ جائے کہیں خامشی میں یہ شب بھی

    مراقبہ تو ہوا اب ذرا جلال میں آ

    تجھے بھی آج کوئی روپ بخشتا ہی چلوں

    تو سنگ ہے تو مرے دست با کمال میں آ

    یہاں زوال کا منظر بھی لا زوال نہیں

    یقیں نہیں تو بیابان ماہ و سال میں آ

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    ہماری طرح حروف جنوں کے جال میں آ نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے