اک خلش کو حاصل عمر رواں رہنے دیا

ادیب سہارنپوری

اک خلش کو حاصل عمر رواں رہنے دیا

ادیب سہارنپوری

MORE BYادیب سہارنپوری

    اک خلش کو حاصل عمر رواں رہنے دیا

    جان کر ہم نے انہیں نا مہرباں رہنے دیا

    کتنی دیواروں کے سائے ہاتھ پھیلاتے رہے

    عشق نے لیکن ہمیں بے خانماں رہنے دیا

    آرزوئے عشق بھی بخشی دلوں کو عشق نے

    فاصلہ میرے اور ان کے درمیاں رہنے دیا

    اپنے اپنے حوصلوں اپنی طلب کی بات ہے

    چن لیا ہم نے انہیں سارا جہاں رہنے دیا

    یہ بھی کیا جینے میں جینا ہے بغیر ان کے ادیبؔ

    شمع گل کر دی گئی باقی دھواں رہنے دیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY