عشق کی داستان کیا کہئے

نظر برنی

عشق کی داستان کیا کہئے

نظر برنی

MORE BYنظر برنی

    عشق کی داستان کیا کہئے

    خامشی ہے زبان کیا کہئے

    ایک دل پر ہزار الزامات

    صبر کا امتحان کیا کہئے

    تیر و نشتر کی بات ہی کیا ہے

    ہوں جو ابرو کمان کیا کہئے

    دیکھ کر اک جمال رعنائی

    آرزو ہے جوان کیا کہئے

    شیوۂ حسن بے وفائی ہے

    آپ سے مہربان کیا کہئے

    منزل عشق ہے کٹھن یارو

    شوق کا امتحان کیا کہئے

    فطرت حسن ہے بہت بے باک

    عشق ہے بے زبان کیا کہئے

    ہے زعیم جہان شعر و ادب

    خضر کا خاندان کیا کہئے

    سادگی بھی ہے اور ندرت بھی

    یہ نظرؔ کی زبان کیا کہئے

    مآخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY