aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

جانے آیا تھا کیوں مکان سے میں

اظہر عنایتی

جانے آیا تھا کیوں مکان سے میں

اظہر عنایتی

MORE BYاظہر عنایتی

    جانے آیا تھا کیوں مکان سے میں

    کیا خریدوں گا اس دکان سے میں

    ہو گیا اپنی ہی انا سے ہلاک

    دب گیا اپنی ہی چٹان سے میں

    ایک رنگین سی بغاوت پر

    کٹ گیا سارے خاندان سے میں

    روز باتوں کے تیر چھوڑتا ہوں

    اپنے اجداد کی کمان سے میں

    مانگتا ہوں کبھی لرز کے دعا

    کبھی لڑتا ہوں آسمان سے میں

    اے مرے دوست تھک نہ جاؤں کہیں

    تری آواز کی تکان سے میں

    ڈرتا رہتا ہوں خود بھی اظہرؔ خاں

    اپنے اندر کے اس پٹھان سے میں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی

    RECITATIONS

    اظہر عنایتی

    اظہر عنایتی,

    اظہر عنایتی

    جانے آیا تھا کیوں مکان سے میں اظہر عنایتی

    مأخذ:

    Jhunka na-e-mausam kaa (Pg. 22)

    • مصنف: azhar inaayatii
      • اشاعت: 2006
      • ناشر: islamic wonders bureau
      • سن اشاعت: 2006

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے