Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

جینے دے گا بھی ہمیں اے دل جئیں بھی یا نہ ہم

ناطق گلاوٹھی

جینے دے گا بھی ہمیں اے دل جئیں بھی یا نہ ہم

ناطق گلاوٹھی

MORE BYناطق گلاوٹھی

    جینے دے گا بھی ہمیں اے دل جئیں بھی یا نہ ہم

    کیا کہیں اب تجھ کو ہم تجھ کو کہیں اب کیا نہ ہم

    اٹھ گئے ہم درمیاں سے اٹھ گیا ہم سے حجاب

    رہ گئے ہم اس کے ہو کر رہ گیا پردا، نہ ہم

    دولت دل کیا ہے جا کر اہل دل سے پوچھیے

    مال تھا اپنا بھی کچھ جانے مگر رکھنا نہ ہم

    رنج رسوائی نہیں دنیا ہے رسوائی کا گھر

    ہیں سبھی رسوا تو یوں سمجھو نہ تم رسوا نہ ہم

    فائدہ کیا رہتی دنیا تک اگر کوئی رہا

    یہ تو ظاہر ہے کہ رہنے کے لئے دنیا نہ ہم

    کھا گئی اہل ہوس کی وضع اہل عشق کو

    بات کس کی رہ گئی کوئی عدو سچا نہ ہم

    خود فراموشی نے رکھا ہے گرفتار خودی

    چھوٹتے کیوں چھوڑتے دامن اگر اپنا نہ ہم

    اس سے کچھ ہوتی اگر ناطقؔ ہمیں تسکین طبع

    آج تک سب جمع کر لیتے کلام اپنا نہ ہم

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے