جس کو دیکھو بے وفا ہے آئنوں کے شہر میں

اعجاز وارثی

جس کو دیکھو بے وفا ہے آئنوں کے شہر میں

اعجاز وارثی

MORE BY اعجاز وارثی

    جس کو دیکھو بے وفا ہے آئنوں کے شہر میں

    پتھروں سے واسطہ ہے آئنوں کے شہر میں

    روز حرف آرزو پر ٹوٹتے رہتے ہیں دل

    روز عرض مدعا ہے آئنوں کے شہر میں

    قہقہے لگتے ہیں آواز شکست دل کے ساتھ

    کب کوئی درد آشنا ہے آئنوں کے شہر میں

    حسن والو کس لیے اعجازؔ سے یہ اجتناب

    اک وہی تو پارسا ہے آئنوں کے شہر میں

    مآخذ:

    • Book: Nuquush-e-daaG (Pg. 178)
    • Author: Sahir Hoshiyarpuri
    • مطبع: Haryana Urdu Acadami (1992)
    • اشاعت: 1992

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites