جنوں کے باب میں یوں خود کو تمہارا کر کے

راہل جھا

جنوں کے باب میں یوں خود کو تمہارا کر کے

راہل جھا

MORE BYراہل جھا

    جنوں کے باب میں یوں خود کو تمہارا کر کے

    ہاتھ ملتا ہوں میں اپنا ہی خسارہ کر کے

    اب مرے ذہن میں بس لذت دنیا ہے رواں

    تھک چکا ہوں تری الفت پہ گزارہ کر کے

    ہم ابھی صحبت دنیا میں ہیں مصروف مگر

    کوئی شب تم کو بھی دیکھیں گے گوارہ کر کے

    ہم سے خاموش طبیعت بھی ہیں دنیا میں کہ جو

    اس کو ہی چاہتے ہیں اس سے کنارہ کر کے

    دیر تک کوئی نہ تھا راہ بتانے والا

    اور پھر لے گئی اک موج اشارہ کر کے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY