میں خاک ہوں سو یہی تجربہ رہا ہے مجھے

راہل جھا

میں خاک ہوں سو یہی تجربہ رہا ہے مجھے

راہل جھا

MORE BYراہل جھا

    میں خاک ہوں سو یہی تجربہ رہا ہے مجھے

    وہ شکل نو کے لئے روندتا رہا ہے مجھے

    اسے جو چاہیے میں ہوں اسی کے جیسا کوئی

    وہ میرے جیسے کی ضد میں گنوا رہا ہے مجھے

    میں وہ ہی خواب سحر جو فضول تھا دن بھر

    طویل شب میں مگر دیکھا جا رہا ہے مجھے

    ادھر یہ فردا خفا ہے مرے تغافل سے

    ادھر خلوص سے ماضی بلا رہا ہے مجھے

    یہی نہیں کہ میں نا مطمئن ہوں دنیا سے

    مرا وجود بھی اک مسئلہ رہا ہے مجھے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY