میں وہ مجنوں ہوں کہ آباد نہ اجڑا سمجھوں

ولی عزلت

میں وہ مجنوں ہوں کہ آباد نہ اجڑا سمجھوں

ولی عزلت

MORE BYولی عزلت

    میں وہ مجنوں ہوں کہ آباد نہ اجڑا سمجھوں

    مشت خاک اپنی اڑا کر اسے صحرا سمجھوں

    اس قدر محو ہوں ان شعلہ رخوں کا جوں شمع

    کہ نہ جلنے کو پہچانوں نہ تماشا سمجھوں

    چشمک یار ہیں مجھ شمع کے حق میں گل گیر

    دم یہ قینچی کے میں انفاس مسیحا سمجھوں

    گردش چشم سجن لے گیا خاطر سے غبار

    اس کو دشت دل عزلتؔ کا بگولا سمجھوں

    مأخذ :
    • Deewan-e-uzlat(Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY