مت غصہ کے شعلے سوں جلتے کوں جلاتی جا

ولی محمد ولی

مت غصہ کے شعلے سوں جلتے کوں جلاتی جا

ولی محمد ولی

MORE BYولی محمد ولی

    مت غصہ کے شعلے سوں جلتے کوں جلاتی جا

    ٹک مہر کے پانی سوں تو آگ بجھاتی جا

    تجھ چال کی قیمت سوں دل نیں ہے مرا واقف

    اے مان بھری چنچل ٹک بھاؤ بتاتی جا

    اس رات اندھاری میں مت بھول پڑوں تجھ سوں

    ٹک پاؤں کے جھانجھر کی جھنکار سناتی جا

    مجھ دل کے کبوتر کوں باندھا ہے تری لٹ نے

    یہ کام دھرم کا ہے ٹک اس کو چھڑاتی جا

    تجھ مکھ کی پرستش میں گئی عمر مری ساری

    اے بت کی پجن‌ ہاری ٹک اس کو پجاتی جا

    تجھ عشق میں جل جل کر سب تن کوں کیا کاجل

    یہ روشنی افزا ہے انکھیا کو لگاتی جا

    تجھ نیہ میں دل جل جل جوگی کی لیا صورت

    یک بار اسے موہن چھاتی سوں لگاتی جا

    تجھ گھر کی طرف سندر آتا ہے ولیؔ دائم

    مشتاق درس کا ہے ٹک درس دکھاتی جا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    mat gusse ke shole suun نعمان شوق

    مأخذ :
    • کتاب : Ghazal Usne Chhedi (Part-1) (Pg. 49)
    • Author : Farhat Ehsas
    • مطبع : Rekhta Books (2016)
    • اشاعت : 2016

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY