وہ کب آئیں خدا جانے ستارو تم تو سو جاؤ

قابل اجمیری

وہ کب آئیں خدا جانے ستارو تم تو سو جاؤ

قابل اجمیری

MORE BY قابل اجمیری

    وہ کب آئیں خدا جانے ستارو تم تو سو جاؤ

    ہوئے ہیں ہم تو دیوانے ستارو تم تو سو جاؤ

    کہاں تک مجھ سے ہمدردی کہاں تک میری غم خواری

    ہزاروں غم ہیں انجانے ستارو تم تو سو جاؤ

    گزر جائے گی غم کی رات امیدو تو جاگ اٹھو

    سنبھل جائیں گے دیوانے ستارو تم تو سو جاؤ

    ہمیں روداد ہستی رات بھر میں ختم کرنی ہے

    نہ چھیڑو اور افسانے ستارو تم تو سو جاؤ

    ہمارے دیدۂ بے خواب کو تسکین کیا دو گے

    ہمیں لوٹا ہے دنیا نے ستارو تم تو سو جاؤ

    اسے قابلؔ کی چشم نم سے دیرینہ تعلق ہے

    شب غم تم کو کیا جانے ستارو تم تو سو جاؤ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY