میرے نازک سوال میں اترو

ظفر حمیدی

میرے نازک سوال میں اترو

ظفر حمیدی

MORE BYظفر حمیدی

    میرے نازک سوال میں اترو

    ایک حرف جمال میں اترو

    نقش بندی مجھے بھی آتی ہے

    کوئی صورت خیال میں اترو

    پھینک دو دور آج سورج کو

    خود ہی اب ماہ و سال میں اترو

    خوب چمکو گی آؤ شمشیرو

    میرے زخموں کے جال میں اترو

    کچھ تو لطف تضاد آئے گا

    میرے غار زوال میں اترو

    خواہ پت جھڑ کی ہی ہوا بن کر

    پیڑ کی ڈال ڈال میں اترو

    مضمحل رات اور تنہائی

    کاش خواب وصال میں اترو

    اے ظفرؔ پیش ہے مہابھارت

    آدمیت کی ڈھال میں اترو

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    میرے نازک سوال میں اترو نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY