مسلم ہوں پر خود پہ قابو رہتا ہے

لیاقت جعفری

مسلم ہوں پر خود پہ قابو رہتا ہے

لیاقت جعفری

MORE BYلیاقت جعفری

    مسلم ہوں پر خود پہ قابو رہتا ہے

    میرے اندر بھی اک ہندو رہتا ہے

    کوئی جادوگر کے بازو کاٹ بھی دے

    اس کے ہاتھ میں پھر بھی جادو رہتا ہے

    رات گئے تک بچے دوڑتے رہتے ہیں

    میرے کمرے میں اک جگنو رہتا ہے

    میرؔ کا دوانا غالبؔ کا شیدائی

    میری بستی میں اک سادھو رہتا ہے

    اس کے لبوں پر انگلش ونگلش رہتی ہے

    میرے ہونٹ پہ اردو اردو رہتا ہے

    عقل ہزاروں بھیس بدلتی رہتی ہے

    یہ دل مر جانے تک بدھو رہتا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY