نمکیں حرف ہے مرا یہ فصیح

تاباں عبد الحی

نمکیں حرف ہے مرا یہ فصیح

تاباں عبد الحی

MORE BY تاباں عبد الحی

    نمکیں حرف ہے مرا یہ فصیح

    کل شئ من الملیح ملیح

    و قنا ربنا عذاب النار

    شمع کی ہے ہمیشہ یہ تسبیح

    لمن الماء کل شئ حی

    شرب مے سے ہوا ہے مجھ کو صحیح

    مثلہ لیس واحد غرا

    ماہ کنعاں بھی تھا اگرچہ فصیح

    جی میں آوے سو کہہ تو تاباںؔ کو

    لیس من فیک شتمنا بقبیح

    مآخذ:

    Deewan-e-Taban Rekhta Website)
    • Deewan-e-Taban Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY